26

اسد عمر  کا  بلاول زرداری کی جانب سے او آئی سی کانفرنس کیخلاف بیان پر شدید ردعمل

اسلام آباد:پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری جنرل  و وفاقی وزیرِ منصوبہ بندی اسد عمر نے پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری کی جانب سے او آئی سی کانفرنس کیخلاف بیان پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے اور اسے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے اسلاموفوبیا کیخلاف تاریخی قرارداد کی منظوری کی صورت میں امتِ مسلمہ کو ملنے والی تاریخی کامیابی پر شرمناک ردِعمل قرار دیا ہے۔ ہفتہ کو پی ٹی آئی مرکزی میڈیا ڈیپارٹمنٹ کی جاری کردہ تفصیلات کے مطابق بلاول زرداری کی جانب سے اسلام آباد میں منعقد ہونے والے او آئی سی اجلاس میں رخنہ اندازی کے عزم کے اظہار پر پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری جنرل و وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا تھا کہ بلاول زرداری ہمیں یہ تو پتہ تھا کے آپ ہمیشہ اہلِ اسلام اور ان کے حقوق کے دفاع میں بات کرنے سے ڈرتے ہیں مگر او آئی سی اجلاس میں رخنہ اندازی کی کھلی دھمکی دیتے ہوئے اس قدر مسلم دشمنی کا اظہار کریں گے اس کی توقع نہ تھی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اسلاموفوبیا اور حرمتِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی نگہبانی کیلئے عالمی ضمیر پر دستک دی جبکہ اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی میں پوری مسلم دنیا نے پاکستان کی پیش کردہ قرارداد کی حمایت کی۔ انہوں نے کہا کہ اقوام عالم کی جانب سے پاکستان کی قرارداد کی تائید اور عالمی سطح پر اسلاموفوبیا کے تدارک کیلئے اجتماعی کاوشوں کے اہتمام پر آمادگی کا اظہار امت مسلمہ کیلئے تاریخی کامیابی کی حیثیت رکھتا ہے جس پر اپوزیشن کی صفوں میں پھیلی مایوسی معنی خیز ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے اسلاموفوبیا کیخلاف قرارداد کی منظوری کی شکل میں تاریخی کامیابی کے بعد اسلام آباد میں او آئی سی کانفرنس کے انعقاد پر اس قسم کے منفی ردعمل سے پیپلزپارٹی اور حزب مخالف کی سیاست کی حقیقت قوم پر مکمل آشکار ہوچکی ہے۔ اپنے بیان میں مرکزی سیکرٹری جنرل اسد عمر نے زور دیکر کہا کہ کانفرنس تو بہرصورت منعقد ہوگی جس کے ذریعے مسلم امہ کی یکجہتی کا اظہارِ ہوگا اور پوری دنیا اسے دیکھے گی۔ پیپلزپارٹی کے چیئرمین یا انکے حواری اسے روک سکتے ہیں تو روک لیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں