23

جو کام  72 سال سے نہیں ہوئے میں نے 8 سال میں کر کے دکھائے، وفاقی وزیر   علی امین گنڈہ پور

ڈیرہ اسماعیل خان:وفاقی وزیر امور کشمیر علی امین گنڈہ پور کا پیپلز پارٹی کے ترجمان فیصل کریم کنڈی کے بیان پر کہنا ہے کہ یہ زنگ زدہ سیاست کرنے والے لوگ ہیں، ان لوگوں کو الزامات لگانے کے علاوہ اور کوئی کام نہیں۔ڈیرہ اسماعیل خان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علی امین گنڈہ پور نے کہا کہ ان لوگوں کا ماضی دیکھ لیں کہ انہوں نے کیا کیا، مجھ پر الزامات لگانے والے بتائیں دہشت گردی میرے دور میں ہوئی یا آپ کے دور میں۔علی امین گنڈہ پور نے کہا کہ ان کے دور میں روزانہ دہشت گردی ہوتی تھی، روز دھماکے اور ٹارگٹ کلنگ ہوتی تھی، ڈیرہ میں پی ٹی آئی کی حکومت آنے کے بعد ٹارگٹ کلنگ کم ہوئی ہے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ فیصل کنڈی نے غیر ذمہ دارانہ بیان دیا ہے، ان کے بڑوں نے ملک کو لوٹا ہے، اس کی ضمانت ضبط ہوئی ہے، بلکہ میں نے اس کو  کافی لیڈ سے ہرایا ہے۔علی امین گنڈہ پور نے اے این پی رہنما کے قتل کے حوالے سے کہا کہ میں چیک کروں گا اے این پی کو سیکیورٹی کیوں نہیں دی گئی، میں نے کبھی اے این پی کا ذکر تک نہیں کیا، مجھے تو تین دن پہلے پتہ چلا کہ شیرانی الیکشن لڑ رہا تھا، میری نہ شیرانی سے بات ہوئی نہ کسی اے این پی کے عہدیدار سے۔انہوں نے کہا کہ فیصل کنڈی ثابت کرے گا ورنہ میں اس کے خلاف کورٹ میں جاوں گا، یہ ہمیشہ لڑوانے کے لئے سانحہ کلاچی کو میرے لئے ایشو بنا کر پیش کرتا رہا ہے، میں نے سانحہ کلاچی کے حوالے سے باقاعدہ کمیشن بنانے کے لئے کہا، مجھے الیکشن کا نہیں انسانی جان کا دکھ ہے، وہ ڈیرہ اسماعیل خان کا مخلص انسان تھا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اے این پی کی بڑی قربانیاں ہیں، ہمیں پرامن رہنا چاہیے، الزامات ان پر لگتے ہیں جو اچھے کام کرتے ہیں، جو 72 سال سے کام نہیں ہوئے میں نے 8 سال میں کر کے دکھائے، گلگت و کشمیر میں میں نے بے انتہا کام کئے، میں کام کرنے والا ہوں میں ملک و قوم کی خدمت کرنے آیا ہوں، یہ ساری پارٹیاں اکٹھے ہو جائیں میں ان کو 65 ہزار کی لیڈ دوں گا۔خیال رہے کہ ڈیرہ اسماعیل خان سٹی مئیرشپ کے لئے وفاقی وزیر علی امین کے بھائی عمر امین گنڈا پور اور پیپلز پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات فیصل کنڈی آمنے سامنے ہیں۔ \

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں