35

حفیظ الرحمن کے پانچ سالہ دور حکومت میں گندم کی قیمتوں میں ایک روپے اضافہ نہیں کیا گیا

گلگت( س۔ر) سیکرٹری اطلاعات مسلم لیگ ن بلتستان ڈویژن نے اپوزیشن لیڈر کے انٹرویو کے ردعمل میں کہا کہ عوام کو گمراہ کرنا بند کریں گندم کی قیمتوں میں اضافے کی شروعات آپ نے اپنے دور حکومت میں کی ہے حفیظ الرحمن کے پانچ سالہ دور حکومت میں گندم کی قیمتوں میں ایک روپے اضافہ نہیں کیا گیا آج آپ اپنی سہولت کاری کو چھپانے کے لئے ملبہ حفیظ الرحمن پر ڈال رہے ہیں۔ مسلم لیگ ن کے دور میں گندم کی قیمت 12 روپے تھی جو ہم نے 5 سال تک برقرار رکھی اور جب گلگت بلتستان میں آپ کی حکومت تھی اور آپ جناب وزیر تھے آپ کے ہی دور میں گندم کی قیمتوں میں یکدم 13 روپے اضافہ کر کے گندم کی قیمتیں 25 روپے تک پہنچائی گئی اور آپ وہ سب کچھ بھول گئے اور اپنی نااہلی اور سہولتکاری کو چھپانے کے لئے الزام حفیظ الرحمٰن پر لگا کر بھاگنا چاہتے ہیں جو انشاءاللہ ہم کبھی ہونے نہیں دیں گےقلبی عامر نے کہا کہ اپوزیشن لیڈر پہلے اپنے دور میں قیمتوں کے اضافے کا عوام کو حساب دیں پھر میڈیا میں آکر بھڑکے ماریں گلگت بلتستان کی عوام آپ اور آپ کی پارٹی کا مکروہ چہرہ جان چکی ہے اب یہ جھوٹا رونا دھونا بند کریں اپنے 3 سال کی حکومت جس میں آپ جناب وزیر تھے آپ کی پارٹی اتحادی حکومت کا حصہ تھی تب آپ جناب اقتدار کے نشے میں مست رہے اور گندم کی قیمتوں میں اضافے کے فضائل بیان کرتے تھے تب آپ کو اس غریب اور لاچار عوام کی ایک پل کے لئے کبھی یاد نہیں آئی اور آج جب آپ اور آپ کی پارٹی کے دیگر ممبران اسمبلی بیروزگار ہوئے تو آپ لوگوں کو عوام کی فکر کھائی جانے لگی اور پھر سے آپ اور آپ کی پارٹی والے یادگار میں عوام کو بیوقوف بنانے پہنچ گئےاپوزیشن لیڈرمیثم کاظم اب گلگت بلتستان خصوصاً سکردو کی عوام اب پہلے کی طرح بیوقوف نہیں رہی جو پھر سے آپ کے جھوٹے بیانات پر یقین کر لیں گلگت بلتستان کی عوام اب آپ سے جو آپ کی حکومت نے گندم کی قیمتوں میں تاریخ کا سب سے بڑا اضافہ کیا تھا اُس کا حساب مانگتی ہے آپ پہلے اپنے دور کا حساب دیں پھر دوسروں سے حساب مانگے اور دوسروں پر جھوٹے اور بےبُنیاد الزامات لگائیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں