32

گلگت بلتستان میں سردی کی آمد کے ساتھ ہی لوگوں میں مختلف بیماریوں کا سامنا

استور (سپیشل رپورٹر) گلگت بلتستان کا انتہائی پسماندہ ضلع استور کا واحد ڈی ایچ کیو ہسپتال ڈاکٹروں سے خالی ہے ایک طرف سردی کی آمد کے ساتھ ہی لوگوں میں مختلف بیماریوں کا سامنا ہے تو دوسری طرح ایک ساتھ سات ڈاکٹروں کی استور سے گلگت ٹرانسفر کرنا قابل افسوس ہے جنرل سیکرٹری خواتین وینگ گلگت بلتستان ثروت صباء انھوں نے مزید کہا کہ استور میں سردیوں کی آمد کے ساتھ ہی لوگ مختلف موسمیات بیماریوں کا شکار ہونے لگے ہیں ایسے میں پوری استور کی ڈیڑھ لاکھ ابادی کا واحد ہسپتال میں زیر تعینات چند ڈاکٹروں کو بھی سفارشی بنیادوں پر استور سے کہیں اور لے جانا انتہائی قابل افسوس عمل ہے دوسری جانب سیکریٹری ہیلتھ نے گزاشتہ دنوں ایک بیان بھی جاری کردیا تھا ڈاکٹروں کو وآپس استور بھیجا گیا لیکن تاہم اب تک ان ڈاکٹروں کی حاضری کو یقینی نہیں بنایا گیا پوری استور کا واحد ہسپتال ہے جہاں ضلع بھر کے مریضوں کا علاج ہوتا ہے تاہم ان دنوں ڈاکٹروں کی عدم موجودگی کے باعث گائنی کے مریضوں کے ساتھ دیگر موسمیات تبدیلی سے رونما ہونے والی بیماریوں کے سینکڑوں مریض پریشان ہیں وزیر اعلی گلگت بلتستان حاجی گلبر اور ان کی کابینہ سے عوامی مطالبہ ہے فوری طور پر استور ڈی ایچ کیو ہسپتال میں ڈاکٹروں کی تعیناتی کو یقینی بنائی حکومت گلگت بلتستان فوری طور پر استور ڈی ایچ کیو ہسپتال میں ڈاکٹروں کی تعیناتی کے ساتھ ساتھ استور کے بالائی علاقوں میں ادویات کی کمی کو بھی پورا کریں ان علاقوں میں مزید برفباری سے قبل گندم ادویات سمیت دیگر ضروریات زندگی کی ایشاء کی فرہمی کو یقینی بنائیں تاکہ سردیوں میں یہاں کی عوام کے لیے مزید مسائل کا سامنا کرنا نہیں پڑے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں