59

خواتین کو معاشی طور پر بااختیار بنانے اور انکی کاروباری صلاحیتوں کو فروغ کیلئے پر عزم ہیں، چیف سیکریٹری گلگت بلتستان

گلگت : چیف سیکرٹری گلگت بلتستان جناب محی الدین احمد وانی نے گلگت بلتستان میں خواتین کی کاروباری صلاحیت کو فروغ دینے کے لیے اقدامات کا اعلان کیا۔ وہ روپانی فاؤنڈیشن اورکارانداز کے زیر اہتمام ایک تقریب سے خطاب کر رہے تھے، جس کا مقصد گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والی پانچ کاروباری خواتین کو ایوارڈ دینا تھا۔ایوارڈ حاصل کرنے والوں میں چلاس ماڈل اکیڈمی، ریگو ریزورٹ سکردو، کورگاہ ویونگ سینٹرگمت ہنزہ، رینز ٹیلزآف ہنزہ اور لٹل اینجیلز ڈے کیئر اور ای سی ڈی سینٹرغذر شامل تھےاپنے خطاب کے دوران چیف سیکرٹری نے گلگت بلتستان حکومت کے طالب علموں اور خواتین میں کاروبار کو فروغ دینے کے عزم کا اعادہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسکولوں میں انٹرپرینیورشپ کی تعلیم کے ذریعے طلباء کو ہنرمند بنایا جارہا ہیں تاکہ وہ جدید خطوط پہ کاروبار شروع کر سکے۔چیف سکریٹری نےان پانچ خواتین کو امید کی کرن اور رول ماڈل کے طور پر سراہا۔ انہوں نے روپانی فاؤنڈیشن اور کارانداز پاکستان کا گلگت بلتستان میں کاروباری خواتین کی مدد کرنے پر شکریہ ادا کیاکارانداز کے سی ای او، وقاص الحسن نے جیتنے والے کاروباری خواتین کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ وہ خطے کی دیگر خواتین کے لیے رول ماڈل کے طور پر کام کرتے ہیں۔ انہوں نے گلگت بلتستان میں تین ہزار اسکول اساتذہ کو مالیاتی خواندگی میں تربیت دینے کا اعلان کیا۔ یہ تربیت یافتہ اساتذہ بعد میں ہزاروں طلباء کو مالیاتی خواندگی میں تعلیم دینگے ، جو نوجوانوں کوکاروباری کوششوں کے ذریعے مزید بااختیار بنائیں گا۔روپانی فاؤنڈیشن کے سینئر ایڈوائزرتعلیم جناب بہادر علی خان نے کہا کہ گلگت بلتستان بھر سےایک سو چاردرخواست دہندگان میں سے پینتیس کو شارٹ لسٹ کیا گیا، اورپھران پانچ کو اس ایوارڈ کے لئیے چنا گیا۔ انہوں نے فاؤنڈیشن کے جاری منصوبوں کے بارے میں تفصیلی گفتگو کی۔میڈیا کے ساتھ بات چیت کے دوران، چلاس ماڈل اکیڈمی کی روحی گل نے دیامر کے دورافتادہ ضلع میں تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے اور اسے خطے کے دیگر اضلاع کے برابر لانے کے لیے اپنے عزم کا اظہار کیا ۔لٹل اینجلس ڈے کیئر اور ای سی ڈی سینٹر کی تنزیلہ نے گزشتہ نو سال کے دوران کاروبار کو چلانے کے اپنے تجربات شیئر کیے۔ انہوں نے ایک خاتون کاروباری کے طور پر درپیش چیلنجز کا ذکر کرتے ہوئے اس گرانٹ کے ذریعے اپنے کاروبار کو مضبوط کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ قالین کے کاروبار میں دو دہائیوں سے زیادہ کے تجربے کے ساتھ شمیم بانو اور ان کی ٹیم نے کاروبار میں کامیابی کے لیے شوق کے ساتھ سخت محنت پر زور دیا۔ ہنزہ کی امبرین لیاقت مختلف مصنوعات کے ذریعے مقامی ثقافت کو زندہ کر رہی ہیں۔اس تقریب میں سیکرٹری اطلاعات جناب فدا حسین، جی بی آر ایس پی کے جی ایم اشفاق احمد، ڈائریکٹر روپانی فاونڈیسن جناب شیر کریم، گروپ سی ای او ایپکس اینڈ کمپنی مسٹر وسیم صمد، سی او او روپانی اکیڈمی جناب جمال الدین شاہ، سرکاری افسران اور پارٹنر تنظیموں کے نمائندوں نے شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں